تاجدار ختم نبوت ۖ کے نعرے لگانے والے کارکنوں کا اہم مطالبہ منظور

پنجاب کابینہ نے ٹی ایل پی سے پابندی ہٹانے کی منظوری دے دی

لاہور: پنجاب کابینہ نے کالعدم تحریک لبیک پر عائد پابندی ہٹانے کی منظوری دے دی،18وزرا کی اکثریت نے تحریک لبیک کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ واپس لینے کی حمایت کی ہے۔

ذرائع کے مطابق کالعدم تنظیم تحریک لبیک پاکستان کے ساتھ جڑے کالعدم کا اسٹیٹس ہٹانے کے معاملے میں پہلی پیش رفت سامنے آگئی ہے۔ پنجاب کابینہ کے وزرا کی مطلوبہ تعداد نے ٹی ایل پی پر عائد پابندی ہٹانے کی سفارش کردی۔ پابندی ختم کرنے کی سفارشات کی سمری کے حق میں کم ازکم 18وزرا کی حمایت درکار تھی جو مل گئی۔

قبل ازیں وفاقی حکومت نے کالعدم تنظیم سے پابندی ہٹانے کے حوالے سے پنجاب حکومت سے رائے طلب کی تھی۔ وزیراعلی پنجاب سیکریٹریٹ نے سمری کابینہ کمیٹی برائے قانون کو بھیجی تھی۔بعدازاں راجہ بشارت کی سربراہی میں اجلاس میں پنجاب کابینہ کو تھرو سرکولیشن سمری پر منظوری لینے کا فیصلہ کیا گیا۔ گزشتہ روز پنجاب کابینہ کو تھرو سرکولیشن سمری ارسال کی گئی۔

واضح رہے کہ سمری پر قانونی طور پر کم ازکم18وزرا کی رائے درکا ر تھی اور اب مطلوبہ تعداد میں سمری پر وزرا نے پابندی ہٹانے کی سفارش کردی ہے چنانہ پنجاب کی تحریری سفارشات موصول ہونے کے بعد اب وفاقی حکومت اگلا قدم اٹھائے گی۔

قبل ازیں وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے ارسال کردہ سمری کی ابتدائی منظوری دیتے ہوئے تحریک لبیک کو کالعدم ختم کرانے سے متعلق صوبائی کابینہ سے تھرو سرکولیشن منظوری لینے کا حکم دیا تھا۔


ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے